پاکستان میں اوّل اوّل

پہلا ہاکی سٹیڈیم پاکستان کے پہلے ہاکی سٹیڈیم کی تعمیر کراچی میں عمل میں آئی۔یہ سٹیڈیم ہاکی کلب آف پاکستان نے تعمیر کیا۔ اس کا افتتاح گورنر مغربی پاکستان جنرل محمد موسیٰ نے 13فروری 1966ء کو کیا۔ پہلا آل پاکستان سپورٹس سیمینار پاکستان میں پہلا سپورٹس سیمینار اگست 1987ء میں پشاور میں منعقد ہوا، جس میں ملک کی بڑی بڑی سپورٹس ایسوسی ایشن اور سپورٹس رائٹرز نے شرکت کی۔ پہلے روز کھیلوں، ثقافت اور سیاحت کے وفاقی وزیر نثار محمد خان نے سیمینار کا افتتاح کیا۔ 

پاکستان کا پہلا سٹیڈیم یہ ڈرنگ سٹیڈیم تھا اور اسے بہاولپور کے انگریز وزیراعظم کرنل اے جے ڈرنگ نے تعمیر کرایا تھا۔ عوامی مطالبے کے پیش نظر اس کا نام جنوری63ء میں تبدیل کر کے بہاولپور سٹیڈیم رکھا گیا۔ اس سٹیڈیم میں سب سے پہلا سہ روزہ کرکٹ میچ ایم سی سی کے ساتھ 24۔ 25 اور 26نومبر1951ء کو کھیلا گیا ،جو برابر رہا۔ 

سپورٹس رائٹرز پر مشتمل ایسوسی ایشن کے سیکرٹری امجد عزیز ملک نے سپاس نامہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان سپورٹس رائٹرز پر مشتمل ایسوسی ایشن کھیلوں اور کھلاڑیوں کو درپیش مشکلات کو ختم کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہی ہے۔ وفاقی وزیر نے اپنے خطاب میں اس سیمینار کے انعقاد پر سرحد سپورٹس رائٹرز ایسوسی ایشن کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ سیمینار کے تینوں ر وز کھیلوں کی ایسوسی ایشنوں کے عہدیدار جن مشکلات کا ذکر کریں گے ان پر قابو پانے کیلئے ہر قسم کے اقدامات کیے جائیں گے۔ 

تعلیمی اداروں میں کھیلوں کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے انہوں نے یقین دلایا کہ وہ وزارتِ تعلیم کے عہدیداروں سے کالجوں اور سکولوں میں کھیلوں کو عام کرنے کے لیے تجاویز پر بات چیت کریں گے۔ معذور فوجیوں کا پہلا مقابلہ پاکستان میں پہلی بار معذور فوجیوں کی کھیلوں کا مقابلہ سیالکوٹ میں 5فروری 1955ء کو شروع ہوا۔ 1988ء کی اولمپک کھیلوں میں تمغہ جیتنے والے واحد کھلاڑی 1988ء کی اولمپک کھیلوں منعقدہ سیول (کوریا) میں پاکستان کے مشہور باکسر حسین شاہ نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔ 

وہ اولمپک گیمز میں کوئی بھی تمغہ جیتنے والے واحد پاکستانی تھے۔ پاکستان پہلی مرتبہ پیراولمپکس میں شامل ہوا 3ستمبرتا14ستمبر1992ء بار سلونا (سپین) میں معذوروں کے جونویں اولمپکس مقابلے ہوئے پاکستان نے ان میں پہلی بار شرکت کی۔ اس کام کو عملی شکل دینے کا بیڑا پاکستان کے نابیناوں کی واحد قومی نمائندہ تنظیم پاکستان ایسوسی ایشن آف دی بلائینڈ نے اٹھایا پاکستانی دستہ چار افراد پر مشتمل تھا، ان میں شاہد حسین (چیف ڈی مشن) خاور ملک ایتھلیٹ اور خالد محمود ایتھلیٹ اور محمد رفیع (کوچ ) شامل تھے۔

 انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کی جانب سے پہلے میڈیکل سیزن آفیسر کا انتخاب ڈاکٹر نشاط ملک پہلے پاکستانی ہیں ،جن کا تقرر بطور میڈیکل سیزن آفیسر کے انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی نے کیا ان کا تقرر فروری 1990 ء میں عمل میں آیا۔ نشاط ملک 6جنوری1955ء کو کراچی میں پیدا ہوئے۔ سندھ یونیورسٹی سے ایم بی بی ایس کیا۔ ہائوس جاب کے بعد سپورٹس میڈیس کا انتخاب کیا اور اس حوالے سے مختلف اداروں کے ساتھ ان کی وابستگی رہی، جن میں پاکستان اولمپک میڈیکل کمیٹی کے چیئرمین اور سرپرست، سپورٹس میڈیسن ایسوسی ایشن آف پاکستان کے صدر، ایشین فیڈریشن آف سپورٹس میڈیسن کے سیکرٹری جنرل انٹرنیشنل فیڈریشن آف میڈیس ایسوسی ایشن کی ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبر رہے۔ 1997  

 پہلی مرتبہ انٹرنیشنل ایمپائر کی تقرری پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان نومبر 1986ء میں لاہور میں کھیلے گئے، دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میں پہلی مرتبہ انٹرنیشنل امپائر مقرر کیے گئے۔ اس طرح پاکستان اور دنیا کے کرکٹ کی تاریخ میں ایک نئے باب کا اضافہ ہوا۔ اس میچ میںا یمپائرنگ کے فرائض بھارت کے وی، کے، راما سوامی اور پی ڈی رپورٹر نے انجام دئیے۔ 

(اِنسائیکلوپیڈیا پاکستان میں اوّل اوّل از زاہد حسین انجم)    

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s