طیب اردوان پہلے عالمی رہنما ہیں جو تیسری بار پاکستان پارلیمنٹ سے خطاب کریں گے

ترک صدر رجب طیب اردوان پاکستان کی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرنیوالے 19 ویں عالمی رہنما ہوں گے، رجب طیب اردوان پہلے عالمی رہنما ہیں جو تیسری بار پاکستان پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کریں گے۔ پاکستان کی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس، قومی اسمبلی یا سینیٹ سے اب تک 18 ممالک کے سربراہ خطاب کر چکے، سب سے پہلے ایران کے شاہ نے 15مارچ 1950 میں پارلیمنٹ کے مشترک اجلاس سے خطاب کیا تھا۔ 3 جولائی 1962 میں ایرانی شاہ نے دوبارہ قومی اسمبلی کا دورہ کیا اورکارروائی دیکھی۔ فلپائن کے صدر ڈیاڈس مکا پاگل نے قومی اسمبلی سے 15 جولائی 1962 کو خطاب کیا تھا۔

انڈونیشیا کے صدراحمد سوئیکارنو نے قومی اسمبلی سے 26 جون 1963 کو خطاب کیا تھا، سری لنکا کے وزیر اعظم باندرانائیکے نے 5 ستمبر 1974 ،ترک صدر کیونان ایورن نے 15نومبر 1985، فلسطین کے صدریاسر عرفات نے قومی اسمبلی سے 24 جون 1989، فرانس کے صدرفرانکوئزمٹرانڈ نے20 فروری 1990۔ ایران کے اسپیکر حجۃ الاسلام علی اکبر ناتیج نوری نے11 اپریل 1994 میں، چینی صدر جیانگ زمن نے سینیٹ کے خصوصی اجلاس سے 2 دسمبر 1996 ، کوئین الزبتھ ٹو نے 8اکتوبر 1997 کو، ترک وزیر اعظم طیب اردوان  نے 26اکتوبر 2009 میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا تھا۔

چین کے وزیراعظم وین جیاباؤ نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے 19 نومبر 2010 کو قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کیا تھا، ترک وزیر اعظم طیب اردوان نے 21 مئی 2012 میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے، چینی وزیراعظم لی کی گیانگ نے سینیٹ کے خصوصی اجلاس سے 23 مئی 2013۔ چینی صدرزی جنگ پنگ نے 21 اپریل 2015 میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا تھا، ترک صدرطیب اردوان مسلسل تیسری باراور چوتھے ترک سربراہ پاکستان کی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے جمعرات 17نومبر کو خطاب کریں گے۔

ملک سعید اعوان

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s